شوال کے چھ روزے


شریعت مطہرہ میں شوال کے چھ روزے مستحب اور مسنون ہیں۔ اور نبی کریم ﷺ کی حدیث مبارکہ جو کہ صحیح سند کے ساتھ مروی ہےسے ثابت ہیں۔ 

“*عن رسول اللہ ﷺقال: من صام رمضان ثم اتبعہ ستا من شوال کان کصیام الدھر“*

ترجمہ: جس نے رمضان کے روزے رکھے اور پھر شوال کے چھ روزے رکھے تو یہ پورے سال کے روزے شمار ہوں گے)۔ اور اس حدیث کو امام مسلم، ترمذی، ابو دائود اور ابن ماجہ نے صحیح سند کے ساتھ ذکر کیا ہے، اور فقہ حنفی کی معتبر کتابوں میں بھی ان روزوں کو مستحب اور مسنون قرار دیا گیا ہے، لہٰذا  اگر صحت وغیرہ کا کوئی مسئلہ نہ ھو تو شوال کے ان روزوں کا اہتمام کرنے کی ضرور کوشش کرنی  چاہیے۔

اللہ پاک ھمیں اس کی توفیق عنایت فرمائے

آمین یا رب العالمین

Share: